پیپلزپارٹی کے فیصل کریم کنڈی اور پی ٹی آئی کے صداقت عباسی کے مابین پروگرام میں تکرار

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رہنماصداقت علی عباسی اور پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما فیصل کریم کنڈی میں نجی ٹی وی چینل کے پروگرام کے دوران دلچسپ نوک جھوک دیکھنے میں آئی۔ صداقت علی عباسی نے کہا کہ کچھ سمجھدار اپوزیشن رہنما سمجھتے ہیں کہ مولانا فضل الرحمان خود تو ڈوب چکے ہیں وہ ہمیں بھی لے ڈوبیں گے۔ چئیرمین سینیٹ کو ہٹانے کی تحریک لائی گئی کیا ہوا۔ ان کے چودہ سینیٹرز بک گئے۔ اب

ایک دوسرے کو کہتے ہیں کہ آپ کے بندے تھے۔ دوسرا کہتا ہے نہیں جی آپ کے بندے تھے۔ہم ایکشن لیں گے ۔پھر کوئی ایکشن تک نہیں لیا گیا اور اب رہ گیا دھرنا جو کہ ناکام ہو گا اس پر شہبازشریف جو کہ پاکستان کی سیاست کا ایک بڑا نام ہے، وہ مولانا فضل الرحمان جو کہ پارلیمنٹ سے باہر ہو چکے ہیں ، کی وجہ سے اپنی کریڈیبلٹی خراب نہیں کریں گے۔ اس پر رد عمل دیتے ہوئے پیپلزپارٹی رہنما فیصل کریم کنڈی کا کہناتھا کہ پی ٹی آئی رہنما نے یہ اعتراف کیا ہے کہ انھوںنے ہمارے سینیٹرز کو خریدا ہے۔ اس پر صداقت علی عباسی کہتے ہیں کہ ہم خریدنے والوں پر لعنت بھیجتے ہیں۔کیا آپ بکنے والوں پر لعنت بھیجیں گے۔ ہم تو ان کی ملکیت قبول ہی نہیں کرتے ۔ جبکہ آپ مانتے ہیں کہ وہ آپ کی پارٹی کے بھی تھے اور بک بھی گئے اس پر آپ کیا ایکشن لیں گے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


تازہ ترین خبریں
آرمی چیف کے بعد وزیراعظم کی ڈی جی آئی ایس آئی سے ملاقات ،کس معاملےپرتبادلہ خیال ہوا،جانیں
تحریک انصاف کے رہنما اسد عمر نے وفاقی وزیر کے عہدے کا حلف اٹھا لیا
ڈپٹی اسپیکرقومی اسمبلی قاسم سوری کی کشمیرپر تقریر روکنےکی بھارتی وفد کی کوششیں ناکام ہوگئیں
سپریم کورٹ طاقتور اور کمزور کے لیے الگ قانون کا تاثر ختم کرے: وزیراعظم
سابق وزیر اعظم نواز شریف لندن کیلئے روانہ
شہباز شریف جو ڈرامے کررہے ہیں قوم سب سمجھ چکی ہے، عمران خان اسلام آباد (نیوز ڈیسک )وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ‘عدالت کا فیصلہ قبول کرتے ہیں، شہباز شریف جو ڈرامے کررہے ہیں قوم سب سمجھ چکی ہے، کہتے ہیں نواز شریف کو کچھ ہوا تو عمران خان ذمہ دار ہوگا، 800 سے زائد قیدی جیلوں میں گزشتہ 10 سالوں میں مرچکے ہیں ان کا کون ذمہ دار ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ‘میرا ایمان ہے کہ پاکستان ایک عظیم قوم بنے گی اور وہ اس وقت بنے گی جب یہ مدینہ کی ریاست کے اصولوں پر کھڑی ہوگی، مدینہ کی ریاست کی بنیاد انصاف اور انسانیت پر رکھی گئی تھی، جو ریاست اپنے کمزور، غریب، بیواؤں، یتیموں پر رحم کرتی ہے وہ کامیاب ہوتی ہے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ‘حضرت علی رضی اللہ عنہ کا قول ہے کہ کفر کا نظام چل جائے گا مگر نا انصافی کا نہیں۔

تازہ ترین ویڈیو
عمران خان کا سعودی ٹی وی کو انٹریو ، انہوںنے دنوں ملکوں بارے کیا کچھ کہا
جنرل راحیل کی دھمکی پر بھارتی پاگل ہوگئے،دیکھیں پاکستانی تجزیہ نگار نے بھی بھارتی کی چھترول کردی
پاکستان مخالف تقریر کرنے پر پاکستانی نوجوان نے لندن ائیرپورٹ پر محمود خان اچکزئی کو گالیاں اور اور ہاتھا پائی
اگر ایاز صادق کے دل میں کھوٹ نہیں تھا تو پھر وہ عمران خان کا سامنا کرنے سے کیوں بھاگے، ایاز صادق غیر جانبدارنہیں رہے۔ سنیے
مجھ سے ذاتی دشمنی نکالی جارہی ہے ۔۔۔، افسوس کہ وزیراعظم صاحب پوری بات سنے بغیر ہی اٹھ کر جارہے ہیں

Copyright © 2019 pakistanlivenews.com. All Rights Reserved