چئیرمین سینیٹ سمیت اہم شخصیات بلوچستان حکومت بچانے پہنچ گئیں


کوئٹہ ( مانیٹرنگ ڈیسک ) چیئرمین سینیٹ میر صادق سنجرانی ، بلوچستان عوامی پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل و سینیٹرمنظور خان کاکڑ ، سینیٹر میر سرفراز بگٹی جام کمال حکومت کو بچانے کے لئے کوئٹہ پہنچ گئے ، وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کے خلاف عدم اعتماد کی تحریک متحدہ اپوزیشن جماعتوں کے 16اراکین کی جانب سے جمع کرائی گئی

تھی تاہم وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال عالیانی کے خلاف اپنے ہی جماعت بلوچستان عوامی پارٹی کے 16اراکین بشمول صوبائی وزراء نے بغاوت کردی ۔ تفصیلات کے مطابق جمعرات کو چیئرمین سینٹ میر صادق سنجرانی بلوچستان عوامی پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل منظور احمد کاکڑ ، سینیٹر میر سرفراز بگٹی بلوچستان عوامی پارٹی کے اپنے ہی ناراض اراکین میر عبدالقدوس بزنجو و دیگر سے ملنے کے لئے بلوچستان اسمبلی عمارت پہنچے ، ان کے پہنچنے پر جب میڈیا نے ان سے سوال کیا کہ کیا وہ جام کمال کی حکومت کو اب کے بار بھی بچا پائیں گے تو ان کا کہنا تھا کہ وہ ابھی پہنچے ہیں وہ ناراض دوستوں سے ملیں گے ، انہیں سنیں گے اور پھر معاملات کو سلجھانے کی کوشش کریں گے ۔ ان سے جب وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کے ساتھ ہونے والی ملاقات سے پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کو تحفظات نہیں ہیں بلکہ تحفظات پارٹی کے دیگر اراکین کو ہے جن سے ہم ملنے جارہے ہیں جب ان سے بات ہوگی تو پھر میڈیا کو تفصیل سے آگاہ کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ جب نیت صاف ہو تو معاملات ضرور سلجھ جاتے ہیں ہم مل بیٹھ کر فیصلہ کریں گے اور امید ہے کہ ساری چیزیں ٹھیک ہوں گی جو بھی ہوگا وہ صوبے کے وسیع تر مفاد میں

ہوگا ۔ تعجب کی بات یہ ہے کہ متحدہ اپوزیشن جماعتوں جمعیت علماء اسلام (ف) ، بلوچستان نیشنل پارٹی ، پشتونخوا میپ کے 16اراکین نے گزشتہ روز وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع کرکے یہ دعویٰ کیا گیا تھا کہ اب کے بار وہ وزیراعلیٰ بلوچستان کے خلاف جمع کرائی گئی تحریک عدم اعتماد کو کامیاب بنائیں گے ،انہیں جتنے ممبران کی ضرورت ہے اس سے زیادہ کی انہیں حمایت حاصل ہیں ، تحریک کے جمع کئے جانے کے بعد وزیراعلیٰ بلوچستان کی جانب سے ٹویٹ میں کہا گیا تھا کہ ان کے خلاف اپوزیشن کی جانب سے تحریک عدم اعتماد لائی گئی ہے تاہم انہیں اپنی جماعت کے اراکین اور حکومتی اتحاد میں شامل پارٹیوں کے اراکین پر اعتماد ہیں اور یہ تحریک ایک مرتبہ پھر ناکام ہوگی ۔ انہوں نے ٹویٹ میں کہا گیا تھا کہ اگر ان پر اپنی جماعت یا پھر اتحادی جماعتوں کے اراکین کی جانب سے عدم اعتماد کیا گیا تو گھر چلے جائیں گے ۔ بلوچستان عوامی پارٹی کے ناراض اراکین اسپیکر بلوچستان میر عبدالقدوس بزنجو و دیگر کے ساتھ مختصر نشست کے بعد چیئرمین سینٹ میر صادق سنجرانی ، میر سرفراز بگٹی ، سینیٹر منظور احمد کاکڑ بوجھل قدموں کے ساتھ اسمبلی کے عمارت سے روانہ ہوئے ۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us