بریلی کے زمیندار باپ بیٹی کی کئی ماہ تک ملازمہ سے زیادتی


بریلی ، بھارت (مانیٹرنگ ڈیسک ) بھارتی شہربریلی کے نواحی گائوں کی رہائشی ایک 14سالہ لڑکی زمیندار اور اس کے بیٹے کی زیادتی کانشانہ بنتی رہی۔ بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق نواحی گائوں کے رہائشی دلیپ ہودا اوراس کی بیوی سنیتا کماری نے اپنی 14سالہ بیٹی روپالی کو قریبی زمیندار راجشیور سنگھ کے ڈیرے پر کام کاج کےلئے رکھوایا۔ روپالی

کئی ماہ تک زمیندار کےہاںکام کاج پر جاتی رہی۔جس کے بعد اس کی والدہ سنیتا کماری نے محسوس کیا کہ اسکی بیٹی کچھ گم سم رہنےلگی ہے اوراس کا جسم کم عمری میں ہی تیزی سے بڑھنے لگا ۔ سنیتا کماری کا کہناتھا کہ اس نے اپنی بیٹی سے کئی بار پوچھا کہ جہاں وہ کام کےلئے جاتی تھی کیا وہاں سب ٹھیک تھا؟ جس پر روپالی خاموش ہوجاتی تھی۔ تاہم ایک دن اس نے اپنی بیٹی پر کچھ دبائو ڈال کر اور ڈانٹ ڈپٹ کر کے پوچھا تو اس نے روتے ہوئے اپنی ماں کو بتایا کہ زمیندار راجیشور سنگھ اور اس کا بیٹا بلونت سنگھ دونوں اس سے بدفعلی کررہےہیں۔ روپالی نے بتایا کہ ایک روز کام کرتے ہوئے راجیشور نے اسے دبوچ لیا اور کہا کہ اگر اس نے زبان کھولی تو وہ اسے اور اس کے ماں باپ کو مروا دے گا۔جس کے بعد اس کے بیٹے بلونت کو بھی پتہ چل گیاکہ اس کا باپ اس کا فائدہ اٹھا رہا ہے۔ جس کے بعد اس نے بھی روپالی کو کہا کہ اسے سب پتہ چل گیا ہے ۔ اس لئے اگراب روپالی کو اس کی بات بھی ماننا ہوگی ورنہ وہ اسے پورے گائوں میں بدنام کروا دے گا۔ یوں 14سالہ لڑکی باپ اور بیٹے دونوں کی زبردستی کا نشانہ بنتی رہی۔ ہیومن رائٹس کی ایک مقامی کارکن ببیتا شرما کی رپورٹ پر پولیس نے مقدمہ درج کرکے ملزمان کو گرفتارکر کے تحقیقات شروع کردی ہیں۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us