نوازشریف نے عمران خان کی مرضی کے بغیر میانداد کو آسٹریلیا بھیجا


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستانی ٹیم کے کپتان عمران خان نے 1992کا ورلڈ کپ کھیلنے والی ٹیم میں جاوید میانداد کو شامل کرنے سے انکا رکر دیا تھا۔معروف کمنٹیٹر قمر احمد نے بتایاہے کہ جاوید میانداد کمر کی شدید تکلیف میں مبتلا تھے ،پاکستانی ٹیم ورلڈ کپ سے دو ماہ پہلے ہی آسٹریلیا میں موجود تھی۔اور پاکستان جاوید میانداد کے بغیر ہی کھیل رہا

تھا۔ عمران خان فٹنس پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرتے تھے جس کےلئے انھوںنے جاوید میانداد جیسے سینئر کھلاڑی کو بھی ٹیم سے ڈراپ کرو ادیا۔جب اس وقت کے وزیر اعظم میاں نوازشریف نے ٹی وی پر میچ دیکھ کر پوچھا کہ جاوید میانداد کہاں ہے۔ تو انھیں بتایا گیا کہ وہ ان فٹ ہونے کی وجہ سے ٹیم میں شامل نہیں کیے گئے۔ جس پر نوازشریف نے حکم دیا کہ فوری طور پر جاوید میاںداد کو آسٹریلیا بھیجا جائے ۔اس طرح عمران خان کی مرضی کے بغیر میانداد ٹیم میں شامل ہوئے ۔ عمران خان نے اس وقت زاہد فضل سے امیدیں باندھی تھیں جو بری طرح ناکام رہے۔ تاہم جاوید میانداد نے ایونٹ میں شامل ہوکر مارٹن کرو کے بعد سب سے زیادہ 437رنزبنائے۔ سیمی فائنل جتوانے میں بھی میانداد کا نمایاں کردار تھا۔ جبکہ فائنل میں بھی میانداد نے شدید تکلیف کے باوجود 58رنز کی اننگز کھیلی اور ان کی جگہ عامر سہیل رننگ کرتے رہے۔ اس طرح نوازشریف کا فیصلہ کپتان عمران خان کی نسبت زیادہ بہتر ثابت ہوا۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us