پیپلز پارٹی سندھ کی حکومت کیوں نہیں چھوڑنا چاہتی اور پی ڈی ایم اجلاس میں کیا طے پایا تھا؟ سینئر صحافی نے بڑا دعویٰ کر دیا


اسلام آباد(ویب ڈیسک )پاکستان پیپلز پارٹی کے اسمبلیوں سے استعفے نہ دینے کے متعلق سینیئر تجزیہ کار مظہر عباس کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کسی بھی صور ت سندھ حکومت نہیں چھوڑنا چاہے گی ,کیو ں کہ ان کو اندازہ ہے کہ جس دن انہوں نے حکومت چھوڑی ان کے خلاف ہونے والا کریک ڈاؤن ہو گا بہت خطرنا ک ہوگا۔،نجی ٹی وی کے ایک پروگرام میں

Advertisement

گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی یہ سوچ رہی ہے کہ سندھ اگر ہم چھوڑ دیں تو اس سے کیا فائدہ ہوگا، مسلم لیگ ن نے پیپلز پارٹی کو یہ بھی آپشن دیا کہ جس طر ح پی ٹی آئی نے خیبر پختونخواہ کی گورنمنٹ نہیں چھوڑی آپ بھی سندھ گورنمنٹ نہ چھوڑیں،آپ قومی اسمبلی سے استعفے دیں،اورغالباً وہی پوائنٹ تھا جس پر پیپلز پارٹی نے وقت مانگا اور کہا کہ ہم یہ معاملہ سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی میں لے جاتے ہیں اور وہاں فیصلہ کریں گے۔ان کا کہنا تھا کہ استعفوں کے معاملے پر نواز شریف بہت انتہائی پوزیشن لے رہے ہیں،یہ آخری آپشن ہوتا ہے اور اس پہلے آپ کو دوسرے آپشنز ضررور تلاش کرتےہیں ،مظہر عباس کا کہنا تھا کہ احتجاج کے طریقے اب تبدیل ہوگئے ہیں،پہلےجلاؤ گھیراؤ کا احتجاج ہوتا تھا پھردھرنوں کا

احتجاج شروع ہوا پھر لانگ مارچ کا آغاز ہوا اورماضی میں جب بھی لانگ مارچ ہوتا کہیں نہ کہیں اس میں اسٹبلیشمنٹ شامل ہوتی تھی،جب گورنمنٹ تبدیل ہوتی تو لانگ مارچ ہوتا تھا،دھرنے مضبو ط ہوتے تھے۔یہ ساری چیزیں ہم نے ماضی میں دیکھی ہیں، پیپلز پارٹی پنجاب میں سپیس چاہتی ہے کیوں کہ اگر مسلم لیگ ن اور اسٹبلیشمنٹ کے درمیان جھگڑا بڑھتا ہے تو اسکا فائدہ پیپلز پارٹی اٹھانا چاہتی ہے ،اسی لئے وہ مسلم لیگ(ق) کے ساتھ بہتر تعلقات چلا رہے ہیں۔

 

 



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us