نو میں سے پانچ اپوزیشن جماعتوں کی قومی اسمبلی میں کوئی سیٹ نہیں


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) اپوزیشن کی نو سیاسی جماعتیں اس بات پر متفق ہیں کہ قومی اسمبلیوں سے اپوزیشن ارکان مستعفی ہوجائیں تاکہ حکومت کو گرایا جا سکے، لیکن پہلے یہ دیکھنا چاہیےکہ ان جماعتوں کی قومی اسمبلی میں کتنی سیٹیں ہیں۔ اسی حوالے سے صحافی ثمر عباس کا کہنا ہے کہ پی ڈی ایم میں شامل جمعیت علمائے پاکستان کی قومی اسمبلی میں

کوئی نشست نہیں ہے۔دوسری جماعت قومی وطن پارٹی ہے جس کے سربراہ آفتاب شیرپاؤ ہیں ان کی بھی کوئی قومی اسمبلی میں کوئی نشست نہیں۔جمعیت اہلحدیث کی بھی قومی اسمبلی میں کوئی نشست نہیں۔
ڈاکٹر عبدالمالک بلوچ کی جماعت نیشنل پارٹی کا بھی قومی امسبلی میں کوئی رکن نہیں۔محمود اچکزئی کی جماعت پختونخوا ملی عوامی پارٹی کا بھی قومی اسمبلی میں کوئی رکن نہیں۔9 میں سے پانچ جماعتوں کی قومی اسمبلی میں کوئی سیٹ ہی نہیں۔جب کہ چھٹی جماعت عوام نیشنل پارٹی ہے جس کی قومی اسمبلی میں ایک سیٹ ہے۔جب کہ اختر مینگل کی جماعت بی این پی مینگل کی چار سیٹیں ہیں۔جے یو آئی کی قومی اسمبلی میں 14 نشستیں ہیں۔جب کہ مسلم لیگ ن کے قومی اسمبلی میں 83 ارکان اسمبلی ہیں۔یعنی کہ استعفے کی حامی 9 میں سے 7 جماعتوں کے کل ملا کر قومی اسمبلی میں صرف 5 ارکان ہیں۔ اسمبلیوں سے استعفے کا کہنے والی 5 جماعتیں ایسی ہیں جن کا قومی اسمبلی میں کوئی ممبر ہی نہیں۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us