وزیراعظم عمران خان نے اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ کیوں کیا؟ وجہ خود ہی بتادی


لام آباد(ویب ڈیسک )وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ جس رکن اسمبلی کومجھ پر اعتماد نہیں ہے وہ کھلم کھلا بتائے اقتدار کی ہوس نہیں ہے۔اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ اسلئے کیا ہے تاکہ سب بے نقاب ہوں۔ مجھے عدم اعتماد کی دھمکی دیکر بلیک میل کیا جارہا تھا لیکن میں نے خود ہی اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ کیا ہے۔خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق

وزیراعظم عمران خان نے پارلیمنٹ سے اعتماد کا ووٹ لینے کا فیصلہ کیا ہے جس کی مشاورت کیلئے سینئر پارٹی رہنماؤں اور وزراء کو وزیراعظم ہاؤس طلب کیا۔وزیراعظم عمران خان نے پارٹی رہنماؤں سے اسلام آباد سے حفیظ شیخ کی سینیٹ میں شکست کے حوالے سے وجوہات سے متعلق بریفنگ بھی لی اور قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لینے سے متعلق مشاورت بھی کی۔اجلاس کے دورن ملک کی مجموعی سیاسی صورتحال، سینیٹ

انتخابات کے بعد پیدا ہونی والی سیاسی گرما گرمی اور اپوزیشن اتحاد پی ڈی ایم کے حوالے سے بھی امور زیر غور آئے۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ چیئرمین سینیٹ کیلئے صادق سنجرانی ہمارے امیدوار ہوں گے، ہمیں معلوم تھا سینیٹ کے انتخابات میں پیسہ چلتا ہے کوشش کی تھی اس بار ایسا نہ ہو۔انہوں نے مزید کہا کہ مجھ پر کسی رکن اسمبلی کو اعتماد نہیں ہے تو وہ کھلم کھلا بتائے مجھے اقتدار کی ہوس نہیں ہے ہمیشہ اقدار کی سیاست کی ہے۔واضح رہے کہ گزشتہ روز خطاب کے دوران بھی وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ میں ہفتہ کے روز قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ لینے جارہا ہوں۔ اگر میں اہل نہیں تو ارکان اسمبلی میرے خلاف ہاتھ کھڑے کردیں میں اپوزیشن میں بیٹھ جاؤں گا۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us