آسٹریلیااوربھارت کے درمیان میچ میں ایساکیاہوا کہ گرائونڈ میں پولیس پہنچ گئی ،کھیل کے میدان سے بڑی خبرآگئی


نئی دہلی(ویب ڈیسک)ہندستان اور آسٹریلیا کے درمیان سڈنی میں کھیلے جا رہے تیسرے ٹیسٹ میں آسٹریلیائی ناظرین بدتمیزی سے باز نہیں آ رہے ہیں۔ سڈنی ٹیسٹ کے چوتھے دن بھی ہندستانی گیندباز محمد سراج کے ساتھ پھر بدزبانی کی گئی۔ سراج نے اس کی شکایت امپائر پال ریفیل سے کی ہے۔ انہوں نے امپائر کو بتایا کہ ان کے خلاف نسلی تبصرے کئے گئے ہیں۔ اس کے بعد پولیس نے سراج کی بتائی ہوئی جگہ سے لوگوں کے ایک گروپ کو اسٹینڈ

Advertisement

چھوڑنے کے لئے کہا۔ میدان سے چھ لوگوں کو باہر نکالا گیا ہے۔اس سے پہلے ہندستانی کرکٹ بورڈ (BCCI) نے آسٹریلیا کے خلاف تیسرے ٹیسٹ کے تیسرے دن کے دوران ٹیم کے کھلاڑی جسپریت بمراہ اور محمد سراج کے ساتھ نشے میں دھت ناظرین کے ذریعہ مبینہ طور پر نسلی تبصرے کے بعد آئی سی سی میچ ریفری کے سامنے رسمی شکایت درج کی ہے۔بی سی سی آئی ذرائع کے مطابق، سراج کو سڈنی کرکٹ میدان کے ایک اسٹینڈ میں موجود نشے میں دھت ایک شخص نے ‘ منکی’ (بندر) کہا جس سے 2007-08 میں ہندستانی ٹیم کے آسٹریلیا دورے کے ‘ منکی گیٹ’ واقعہ کی یاد تازہ ہو گئی۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ منکی گیٹ واقعہ بھی سڈنی ٹیسٹ کے دوران ہی ہوا تھا جب اینڈریو سائمنڈس نے دعویٰ کیا تھا کہ ہربھجن سنگھ نے انہیں کئی بار بندر کہا تھا۔ لیکن بھارتی آف اسپنر کو اس معاملے کی سماعت کے بعد پاک صاف کر دیا گیا تھا۔دن کا کھیل ختم ہونے کے بعد ہندستانی ٹیم کے سینئر کھلاڑیوں، امپائروں اور سیکورٹی افسران کے درمیان کافی طویل چرچا ہوئی تھی۔ اس میں کپتان اجنکیا رہانے بھی شامل تھے۔ یہ واقعہ تب ہوا جب دونوں ہندستانی کھلاڑی آسٹریلیا کی دوسری اننگز کے دوران فیلڈنگ کر رہے تھے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us