سانحہ مچھ میں غیر ملکی طاقتیں ملوث،وزیراعظم کوئٹہ کیو ں  نہیں جارہے؟وزیرداخلہ نے حیران کن بات کہہ دی


اسلام آباد(نیوزڈیسک)وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ پاکستان میں دہشت گردی کی نئی لہر آئی ہے ،جس سے نمٹنے کے لئے اقدامات اٹھائے جارہے ہیں ،دہشت گردی کے خطرے سے اداروں کو آگاہ کردیا ہے ،بلوچستان اور ملک کے کئی شہروں میں ہائی الرٹ ہے ،مریم اوربلاول نے سیاسی تقریر کی ، مولانا عبدالغفورحیدری نے دھرنے والوں کو ڈٹے رہنے کا درس دیا ،سانحہ مچھ میں غیر ملکی طاقتیں ملوث ہیں ،چار ماہ میں علماکو ٹارگٹ کرنیوالے چار گروہ پکڑے گئے ۔

وفاقی وزیر داخلہ نے ہنگامی پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایت پر کوئٹہ گیا تھا ہزارہ بردری کو پچھلے کئی سالوں سے نشانہ بنایا جارہا ہے جس میں بین الاقوامی قوتیں ملوث ہیں چند ماہ میں کئی گروہ پکڑے جو فرقہ واریت میں ملوث تھے دھرنا مظاہرین کے تمام مطالبات تسلیم کیے اور وزیراعظم کو رپورٹ دی ، وزیراعظم ہزارہ قبیلے سے ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں ،علی زیدی اور زلفی بخاری کوئٹہ میں موجود ہیں امید ہے تمام معاملات خوش اسلوبی سے طے ہو جائیں گے ۔پاکستان میں دہشت گردی کی نئی لہر آئی ہے،لاہور پشاور کوئٹہ اور کراچی میں بھی ہائی الرٹ ہے ،مچھ واقعہ کے بعد علاقے میں ایف سی سمیت قانون نافذ کرنیوالے ادارے سرچ آپریشن کررہے ہیں، قاتلوں کو جلد گرفتارکرلیا جائے گا ۔ہم نے علما کرام سے بھی تعاون مانگا ہے ۔انہوں نے کہاکہ عمران خان کے دورہ کوئٹہ میں تاخیر کی وجوہات نہیں بتا ئی جاسکتی وزیراعظم کی کوئی شرط نہیں ،بہت سے

معاملات ہیں جن کی وجہ سے وہ وہاں نہیں جارہے ۔دھرنے والوں کا ایک مطالبہ بلوچستان حکومت کاخاتمہ بھی تھا ،مریم نوازاور بلاول کو وہاں تقریر سیاست سے ہٹ کر نی چاہیے تھی۔شہدا کی تدفین پر مذاکرات جاری ہیں ،اگرمیتوں کی تدفین ہوجائے تو عمران خان کی حد تک معاملہ ایک گھنٹے میں حل ہو جائے گا ۔انہوںنے کہاکہ افغان شہدا کے لواحقین کو معاوضہ دیا جائے گا ۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us