ناران میں بارش کے باعث بدترین لینڈ سلائیڈنگ ہزاروں سیاحوں کے بارے میں انتہائی تشویشناک خبرآگئی


ناران (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان کے خوبصورت سیاحتی مقام ناران کے علاقے بابوسرٹاپ کے نزدیک بارش کی وجہ سے لینڈ سلائیڈنگ کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں ۔جس کی وجہ سڑک بند ہوگئی اور ہنزہ گلگت جانے والے ہزاروں سیاح پھنس گئے۔ تاحال انتظامیہ کی جانب سے روڈ کو کھولنے کے اقدامات نہ ہو سکے۔دونوں اطرف سیکڑوں گاڑیاں موجود ہیں۔ موسم

کی خرابی کے باعث امدادی کام میں تاخیر کا شکار ہو گئے ہیں۔ یہ لینڈ سلائیڈنگ بابو سرٹاپ سے 8 کلو میٹر دور ہوئی ہے،مسافروں کا کہنا ہے کہ سڑک کھولنے کے لیے ابھی تک کوئی نہیں پہنچا۔خیال رہے کہ چند روز قبل ناران کاغان میں کورونا وائرس کے کیسز سامنے آنے حکام کے مطابق خیبرپختونخوا کے سیاحتی مقامات میں ہوٹل ملازمین میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد درجنوں سے زائد ہوٹل بند کر دیے گئے ہیں۔ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق ضلعی حکومت کے اہلکار مقبول حسین نے بتایا کہ شوگراں، ناران اور کاغان جیسے زیادہ متاثرہ علاقوں میں اتوار سے لاک ڈاؤن کیا گیا ہے تاکہ وائرس کو مزید پھیلنے سے روکا جا سکے۔ان کا کہنا تھا کہ جن 47 ہوٹل ملازمین کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا ہے انہیں انہی ہوٹلوں میں قرنطینہ کیا گیا ہے جہاں وہ کام کرتے ہیں۔سیاحتی مقامات پر ہوٹل ملازمین میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد سوشل میڈیا صارفین میں سے کئی صارفین عوام کو مورود الزام ٹھہراتے نظر آئے تو کچھ نے حکومت کے سیاحی مقامات کو کھولنے کے فیصلے پر تنقید کی۔واضح رہے کہ عالمی ادارہ صحت اور بل گیٹس نے بھی اپنے ایک انٹرویو میں پاکستان کا حوالہ کامیاب مثال کے طور پر دیا ہے۔ اب جبکہ پاکستان کورونا وائرس کی آخری لہر سے نمٹ رہا ہے اور ملک میں فعال کیسوں کی تعداد 10 ہزار کے قریب رہ گئی ہے ایسے میں سیاحت کے شعبے کا کھلنا اور لاکھوں لوگوں کا ایک ساتھ ان علاقوں میں بنا کسی حفاظتی اقدامات کے جمع ہونا بہت سے خدشات کو جنم دے رہا ہے



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us