پی ٹی آئی کو بڑا جھٹکا، 2 مزید اراکین اسمبلی شدید ناراض، حکومت کو دوٹوک پیغام بھیج دیا


لاہور(نیوز ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے مزید 2 ارکان اسمبلی ناراض ہو گئے۔پنجاب کے اراکین اسمبلی نے گلے شکوے کیے گئے۔ناراض رہنما قاسم لنگاہ کا کہنا ہے کہ مسائل حل نہ ہوئے تو احباب سے مشاورت کروں گا۔صوبائی حلقہ پی پی 222 کے ضمنی انتخابات میں آزاد حیثیت میں کامیابی کے بعد 15ماہ تک حکومت کا ساتھ دینے والے رکن صوبائی اسمبلی قاسم خان لنگاہ نے کہا ہے کہ حلقے میں عوامی مسائل کے حل کے لیے فوری اقدامات

نہ کیے گئے تو احباب سے مشاورت کروں گا۔قاسم خان لنگاہ کا کہنا تھا کہ 15 ماہ تک حکومت کا بھرپور ساتھ دیا۔توقع تھی حکومت بہتری لے کر آئے گی لیکن حالات پہلے سے زیادہ خراب ہو گئے۔کاشتکاروں کا برا حال ہے۔عوام کو مطمئن کرنے میں مشکلات پیش آ رہی ہیں۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے تصدیق کی کہ پنجاب میں فارورڈ بلاک کے لیے ان سے بھی رابطہ کیے گئے تاحال کوئی وعدہ نہیں کیا۔حکومت مسائل کے حل کے لیے بلا تاخیر اقدامات کرے گی تو ساتھ دیتا رہوں گا۔اسی طرح ناراض رہنما رضا خاکوانی نے کہا کہ کس سے شکوہ کریں۔خیال رہے کہ جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے پاکستان تحریک انصاف کے 20 ناراض اراکین صوبائی اسمبلی نے اپنا الگ گروپ بنایا تھا۔ وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے جنوبی پنجاب سے تعلق رکھنے والے پاکستان تحریک انصاف کے 20 ناراض اراکین صوبائی اسمبلی کو کل باہمی گفتگو کے لیے بلایا ہے۔عثمان بزدار سے ملاقات میں ناراض اراکین اسمبلی اپنے مطالبات کے بارے میں بتائینگے۔ ذرائع کا مزید بتانا ہے کہ ناراض اراکین نے پنجاب کے وزیراعلیٰ کو تحفظات دور کرنے کے لیے فروری تک کا وقت دیا ہوا ہے۔ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ ے۔پی ٹی آئی پنجاب میں جو 20 ہم خیال لوگوں کا گروپ بنا تھا اس کی سرپرستی وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کر رہے تھے۔اس گروپ کا مقصد ہے کہ عثمان بزدار کو با اختیار بنایا جائے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us