جنرل قاسم سلیمانی کے بعد ایران کو ایک اور بہت بڑا دھچکا


ہران (مانیٹرنگ ڈیسک) جنرل قاسم سلیمانی کے بعد ایران کو ایک اور بہت بڑا دھچکا، ایران کی اہم ترین شخصیت قاتلانہ حملے میں جاںبحق ۔۔۔جنرل قاسم سلیمانی کا قریبی ساتھی قاتلانہ حملے میں ہلاک ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق ایرانی کے پیراملٹری فوج بیسج کے کمانڈر عبدالحسین مجدمی نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ہلاک ہو گئے۔ واقعہ صوبہ خوزستان کے شہر درخوین میں پیش آیا جہاں کمانڈر عبدالحسین کے گھر کے سامنے نقاب پوش افراد نے فائرنگ کردی۔

کمانڈر عبدالحسین مجدی امریکی حملے میں ہلاک ہونے والے جنرل قاسم سلیمانی کے قریبی ساتھی تھے۔ ایران کے میڈیا کے مطابق نامعلوم افراد موٹر سائیکل پر سوار تھے۔ تاہم ان کو ہلاک کرنے کا کیا مقصد تھا تحقیقات کی جارہی ہیں۔واضح رہے اس سے قبل امریکہ نے عراق میں حملہ کرکے ایران کے ہیرو جنرل قاسم سلیمانی کو ہلاک کر دیا تھا۔ جس پر ایران نے انتہائی سخت ردعمل دیا ۔

اور جلد ہی اس کا جواب دینے کی دھمکی دی۔ بعدازاں ایران کی جانب سے عراق میں موجود امریکی ایئر بیس پر 22 راکٹ حملے کئے جس میں درجنوں افراد کی ہلاکت کا دعویٰ کیا گیا تاہم چند امریکی فوجی بھی زخمی ہوئے۔ قاسم سلیمانی ایرانی میجر جنرل تھے۔ جو امریکی فوج کے ہاتھوں 3 جنوری 2020 کو ہلاک ہو جانے تک سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کے بازو قدس فورس کے سپہ سالار اعلی کے عہدے پر فائز تھے۔
ایران عراق جنگ کے دوران وہ لشکر 41 ثاراللہ کرمان کی قیادت کر رہے تھے۔وہ 24 جنوری 2011 کو میجر جنرل کے عہدے پر فائز ہوئے۔ سید علی خامنه‌ای، رهبر جمهوری اسلامی ایران نے ان کی خدمات کے اعتراف میں انہیں شہید زندہ کا خطاب دیا۔ اور بعد از مرگ انہیں لیفٹینٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دی۔ تاہم امریکہ نے میزائل حملے سے ایران کے ہیرو قاسم سلیمانی کو ہلاک کر دیا تھا۔ جس کے بعد خطے کے حالات کشیدہ ہو گئے تھے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us