فیصل واوڈا کے استعفے سے متعلق بڑی خبر آگئی


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک ) فیصل واڈا سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ؟ ٹی وی شوز میں شرکت پر پابندی عائد کیے جانے کے باوجود معاملہ مزید بگڑ گیا، میڈیا رپورٹس کے مطابق تحریک انصاف نے وفاقی وزیر سے استعفیٰ لینے کا حتمی فیصلہ کر لیا، ٹی وی شو میں بوٹ لے جانے کی حرکت کے باعث حکومت کیلئے مشکلات بڑھ گئیں۔ تفصیلات کے مطابق کچھ ٹی

وی چینلز کے ذرائع کی جانب سے دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ وفاقی وزیر فیصل واڈا سے استعفیٰ لینے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔
بتایا گیا ہے کہ تحریک انصاف کی قیادت اور بیشتر حکومتی اراکین ٹی وی شو میں بوٹ لے جانے کی حرکت کرنے پر فیصل واڈا سے شدید نالاں ہیں۔ اسی باعث فیصلہ کیا گیا ہے کہ ان سے استعفیٰ لے لیا جائے۔ تاہم اس حوالے سے حکومت یا تحریک انصاف کی جانب سے تاحال کوئی اعلان نہیں کیا گیا۔ دوسری جانب معاون خصوصی اطلاعات نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے وفاقی وزیر فیصل واوڈا سے نجی ٹی وی کے ٹاک شو میں ان کے رویے پر وضاحت طلب کر لی۔ وزیراعظم نے فیصل واڈا کی کسی بھی ٹاک شو پر آئندہ دو ہفتوں کیلئے شرکت پر پابندی عائد کردی ہے۔ واضح رہے وفاقی وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا 14 جنوری کو نجی ٹی وی کے ٹاک شو پروگرام میں بوٹ لے کر آئے اور اپنے مخالف اپوزیشن رہنماؤں کو نیچا دکھانے کیلئے جب پروگرام شروع ہوا تو بوٹ نکال کر اپنے ساتھ

ٹیبل پر رکھ لیا۔ انہوں نے اپوزیشن رہنماؤں قمر زمان کائرہ اور سینیٹر جاوید عباسی کی موجودگی میں اپوزیشن پر آرمی ایکٹ ترمیمی بل کی حمایت پر تابڑ توڑ حملے کیے اور کہا کہ اپوزیشن نے لیٹ کر اور چوم کر بوٹ کو عزت دی۔
کوئی شرم حیا ہے؟ قوم نے ان کی اصلیت دیکھ لی۔ فیصل واوڈا کے بیان پر پیپلزپارٹی کے مرکزی رہنماء قمر زمان کائرہ نے کہا کہ ہمیں کہتے ہیں بوٹ پالش کیے، خود اٹھا کرلائے ہیں۔ بوٹ سامنے رکھ کر یہ کہہ رہے ہیں کہ جو کرایا فوج نے کرایا ہے۔ ان کا مطلب یہ ہے کہ ہم نے ان کے نہیں فوج کے کہنے پر ووٹ دیا۔ تاہم اپوزیشن رہنماؤں کے کہنے کے باوجود جب بوٹ کو وہاں سے ہٹایا نہیں گیا تو قمر زمان کائرہ اور جاوید عباسی پروگرام سے یہ کہتے ہوئے اٹھ کر چلے گئے کہ اس طرح اداروں کو بدنام نہ کیا جائے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us