آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کامعاملہ، حکومتی وفد(ن) لیگ سے مذاکرات کیلئے پہنچ گیا


اسلام آباد (نیوز ڈیسک) آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے مسلم لیگ ن حکومتی وفد کیساتھ مل بیٹھی۔ تفصیل کے مطابق گیا ہے کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے معاملے پر حکومت اور مسلم لیگ ن کے درمیان مذاکرات ہوئے، پرویز خٹک کی سربراہی میں حکومتی وفد نے مذاکرات اپوزیشن کے چیمبر میں کئے۔ نجی چینل کی رپورٹ

کے مطابق مسلم لیگ ن کی جانب سے اہم شخصیات نے شرکت کی جن میں خواجہ آصف ، سردار ایاز صادق ، رانا تنویر سمیت دیگر کئی رہنما شامل تھے۔جبکہ حکومتی وفد میں وزیر دفاع پرویزخٹک سمیت شبلی فرا اور اعظم سواتی بھی شامل تھے۔ حکومت وفد کی جانب سے مسلم لیگ ن کو آرمی ایکٹ پر ترمیم میں کیلئے قانون سازی پر حمایت حاصل کرنے کی درخواست کی گئی۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر دفاع پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ آرمی ایکٹ میں تبدیلی کیلئے اپوزیشن رہنما وٴں اور جماعتوں سے رابطے جاری ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ ن کے بعد دیگر اپوزیشن جماعتوں سے رابطے کریں گے۔ پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت کا معاملہ پارلیمنٹ میں اٹھائیں گے۔واضح رہے

سینئر تجزیہ کار عارف حمید بھٹی آرمی ایکٹ کی ترمیم کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ اپوزیشن کی ایک بڑی جماعت نے حکومت کی حمایت کا اعلان کردیا ہے۔ عارف حمید بھٹی نے کہا تھا کہ کہ پاکستان مسلم لیگ ن آرمی ایکٹ میں کسی طرح رکاوٹ نہیں بنے گے۔جس کی یقین دہانی کے صدر پاکستان مسلم لیگ ن شہباز شریف اداروں کو یقین دہانی کرادی ہے۔ واضح رہے عدالت کی جانب سے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع پر قانون سازی کیلئے 6 ماہ کی مہلت دے رکھی ہے جس کے بعد حکومت نے معاملہ پارلیمنٹ میں لے کر جانے کا فیصلہ کیا ہے اور گزشتہ روز ہونے والے کابینہ کے اجلاس مین فیصلہ کیا گیا تھا کہ قانون سازی کیلئے اپوزیشن سے رابطے کئے جائیں گے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us