کینیڈا نے بڑی تعداد میں بھارتی طلبا کو ملک بدر کر دیا


کینیڈا (نیوز ڈیسک) کینیڈا نے بڑی تعداد میں بھارتی طلبا کو ملک بدر کر دیا۔تفصیلات کے مطابق کینڈین حکومت کی جانب سے بڑی تعداد میں بھارتی طالب علموں کو ملک بدر کرنے کے احکامات جاری کر دئیے گئے۔اطلاعات کے مطابق بھارت سے کینیڈا جانے والے طالب علموں نے کینڈین یونیورسٹیوں میں داخلوں کے لیے جعلی آئلٹس ٹیسٹ پاس کرنے کے

سرٹیفیکیٹ جمع کروائے تھے جس کی بنا پر انہیں فورا ملک چھوڑنے کے لیے کہا گیا ہے۔جس کے باعث ائیرپورٹ پر رش لگ گیا اور بعدازاں طالب علموں نے احتجاج شروع کر دیا ۔ خیال رہے کہ ہر سال ہزاروں کی تعداد میں بھارت سمیت مختلف ممالک سے پڑھائی کے سلسلے میں طلبہ و طالبات کینیڈا کا رُخ کرتے ہیں۔ دوسری جانب خبر یہ ہے کہ انڈین پارلیمان کے ایوانِ زیریں نے کچھ روز قبل 12 گھنٹے طویل گرما گرم بحث کے بعد تارکینِ وطن کی شہریت سے متعلق متنازع ترمیمی بل کثرتِ رائے سے منظور کر لیا۔لوک سبھا نے متنازعہ ترمیمی بل کی منظوری پیر کو رات گئے دی۔ اس بل کے حق میں 311 ووٹ آئے جبکہ اس کی مخالفت میں 80 ووٹ پڑے۔بل کی لوک سبھا سے منظوری کے بعد انڈین وزیر اعظم نریندر مودی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنی خوشی کا اظہار یہ کہتے ہوئے کیا کہ ’خوشی ہوئی کہ لوک سبھا نے ایک بھرپور اور پرزور بحث کے بعد شہریت (ترمیمی)

بل 2019 منظور کر لیا۔ میں اس بل کی حمایت کرنے پر مختلف اراکین پارلیمان اور پارٹیوں کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔‘اس مسودۂ قانون کے تحت بنگلہ دیش، پاکستان اور افغانستان سے انڈیا آنے والے ہندو، بودھ، جین، سکھ، مسیحی اور پارسی مذہب سے تعلق رکھنے والے غیر قانونی تارکین وطن کو شہریت دینے کی تجویز دی گئی ہے لیکن اس میں مسلمانوں کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔جب پیر کو وزیرِ داخلہ امت شاہ نے ایوان میں بل پیش کرنے کی اجازت چاہی تو حزبِ اختلاف کے اراکین نے ایوان میں خوب ہنگامہ برپا کیا۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us