عمران خان چھت پھلانگ کر بھاگ گئے ، ڈی چوک میں سراغ رساں کتے چھوڑے جائینگے تو وہ کس طرف جائینگے، منشیات فروشی کےدھندےمیں پاکستان کی بڑی شخصیت کے ملوث ہونے کا انکشاف


لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) رانا ثناء اللہ پر منشیات فروشی کے الزم پر تبصرہ کرتے ہوئے رہنما پاکستان پیپلزپارٹی پلوشہ خان نے کہا ہے کہ اینٹی نارکوٹکس سراغ رساں کتوں کو ڈی چوک میں چھوڑ کر دیکھے تومعلوم ہو جائے گاکہ منشیات فروشی کے دھندے میں کون سی بڑی شخصیت منسلک ہے۔ پلوشہ خان نے کہا کہ بڑی شخصیت اگر منشیات فروشی میں ملوث

ہوبھی تو اس طرح سے منشیات اپنی گاڑی میں لے کر نہیں گھومتی۔ اس سے بڑھ کر رانا ثناء اللہ کو معلوم تھا کہ وہ ہٹ لسٹ میں ہیں۔ انہوں نے کہا رانا ثناء اللہ پر جعلی مقدمہ انتقام لینے کیلئے بنایا گیا ۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے پلوشہ خان نے کہا کہ پکڑے جانے والوں کے چہرے پر مسکراہٹیں ہیں اور جن لوگوں نے گرفتار کیا ہے وہ ٹی وی پر ماتم کر رہے ہیں۔ان کا کہنا ہے کہ اس وقت اپوزیشن کے تمام لوگ گرفتاری دے رہے ہیں ، تاہم مشرف کے دور میں عمران خان سیڑھیاں لگا کر چھت پھلانگ گئے تھے ۔مونچھوں سے پکڑ کے جیل میں ڈالنے کی باتیں کرنے والوں کی خود مونچھیں ہیں ہی نہیں انہیں کان سے پکڑ کر جیل میں ڈالا جائے گا۔یاد رہےمنشیات برآمدگی کیس میں اہور ہائیکورٹ نے مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناء اللہ کو ضمانت پر رہا کر دیا تھا ۔ جسٹس چوہدری مشتاق نے رانا ثناء اللہ کی ضمانت کی درخواست منظور کی تھی ۔جس کے بعد رانا ثنا ء اللہ نے عدالت میں10 لاکھ روپے کے دو

مچلکے جمع کرائے تھے۔ واضح رہے کہ اس سے قبل ستمبر کے مہینے میں رانا ثناء اللہ کی رہائی کی درخواست ضمانت مسترد کر دی گئی تھی۔ بعدزاں رانا ثناء اللہ کو رہا کر دیا گیا تھا۔ جس پر رہنما پیپلزپارٹی پلوشہ خان نے کہا ہے کہ راناء ثنا اللہ کو جعلی مقدمے میں گرفتار کیا گیا۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us