نیب نےایک سال میں کتنے ارب روپے ریکور کرکے قومی خزانے میں جمع کروائے ، سالانہ کارکردگی رپورٹ جاری، جان کر آپ بھی دنگ رہ جائینگے


راولپنڈی(نیوز ڈیسک) قومی احتساب بیورو راولپنڈی نے سال 2019 کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی جس میں بتایا گیا ہے کہ رواں برس کے دوران 94 ارب روپے سے زائد کی ریکوری کی گئی جبکہ متعدد اہم سیاسی شخصیات کو مختلف بدعنوانی کے مقدمات اور ریفرنسز دائر ہونے پر گرفتار بھی کیا گیا۔نجی ٹی وی چینل اے آر وائی کے مطابق سال

2019 نیب راولپنڈی ریجن کے لیے بہت اہم ثابت ہوا کیونکہ مختلف مقدمات میں ملزمان سے جرمانے اور پلی بارگین کے عوض تاریخی وصولیاں کی گئیں۔نیب راولپنڈی نے رواں برس اہم مقدمات کی تحقیقات کیں جن میں جعلی اکاؤنٹس کیس، مضاربہ اسکینڈل، جعلی ہاؤسنگ سوسائٹیز، ناروال اسپورٹس کملیکس و دیگر شامل ہیں۔نیب نے ہاؤسنگ سوسائیٹرز اور جعلی اکاؤنٹس کیس سمیت مختلف مقدمات میں سابق صدر آصف زدراری، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل، سابق وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال، رکن قومی اسمبلی فریال تالپور سمیت 67 اہم سرکاری و پرائیوٹ شخصیات کو گرفتار کیا۔رواں سال بدعنوانی کے 32 ریفرنسز احتساب عدالت اسلام آباد میں جمع کرائے گئے جبکہ 162 انکوائریاں اور 39 ریفرنسز کی انویسٹی گیشن کی گئیں۔بین الاقوامی شہرت یافتہ جعلی اکاؤنٹس کیس کی تحقیقات کا آغاز ڈی جی نیب راولپنڈی کی سربراہی کیا گیا، اس کیس میں اب

تک 13ارب روپے سے زائد کی وصولیاں کی جاچکی ہیں جبکہ اربوں کی واپسی کے معاملات بھی جلد طے پا جائیں گے۔ کیس میں نامزد سابق صدر آصف زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور و دیگر اہم شخصیات کو کو گرفتار کر کے جیل بھیجا گیا۔ایل این کیس میں سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی، سابق وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل اور سابق ایم ڈی پی ایس او عمران الحق شیخ کو بھی گرفتار کیا گیا۔بدنامِ زمانہ مضاربہ اسکینڈل میں نامزد ملزمان کو 14 سال کی سزا دی گئی جبکہ اُن سے 2 ارب روپے کی وصولی بھی کی گئی۔سال کے آخری مہینے میں نیب نے نارروال اسپورٹس کمپلیکس کی لاگت بڑھنے اور اختیارات کا ناجائز استعمال کرنے پر ن لیگی رہنما احسن اقبال کو بھی اپنی گرفت میں لیا اور پھر انہیں احتساب عدالت نے ریمانڈ پر نیب کے حوالے کیا۔علاوہ ازیں نیب راولپنڈی نے برطانوی نیشنل کرائم ایجنسی کے ساتھ مشترکہ اندرون اور بیرون ملک آپریشن بھی کئے، کرپشن کے خلاف

کارروائیوں کے ساتھ ساتھ عوام میں روک تھام کے لئے آگاہی مہم بھی جاری رکھی گئی۔ اس ضمن میں تعلیمی اداروں میں لیکچرز بھی دئیے گئے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us