حکومت نے نیب کومن پسند افسران سے بھر دیا


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سینئر تجزیہ کار حامد میں نے دعویٰ کیا ہے کہ چیئر مین نیب جسٹس (ر)جاوید اقبال لابنگ کے ذریعے آئے۔ تفصیل کے مطابق حامد میر نے نجی ٹی وی کے ایک پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ جاوید اقبال لابنگ کر کے چیئرمین نیب بنے۔ ان کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ کے رہنما شاہد خاقان عباسی جو اس وقت وزیراعظم تھے جاوید اقبال کے خلاف تھے،جبکہ اپوزیشن لیڈر بھی جاوید اقبال کے چیئرمین نیب بننے کے

خلاف تھے۔دونوں کو دباو میں لاکر جسٹس (ر) جاوید اقبال کو چیئرمین نیب بنایا۔ حامد میر نے کہا کہ ایک شخص کا چیئرمین نیب کے ساتھ تعلق ہے جس کے خلاف میں کافی پروگرامز بھی کر چکا ہوں۔ جس سے سب واقف ہیں۔ تو نیب کس طرح احتساب کر سکتی ہے۔سینئر تجزیہ کار کا کہنا ہے حکومت نے نیب کو اپنے من پسند افسرون سے بھرا ہوا ہے۔ نیب کی حراست میں لوگوں پر انوسٹیشین جرنلسٹس کو ایکشن میں آنا ہوگا۔کرپشن کے خلاف سیمینار میں دعوت دی گئی، جس کو میں نے یہ کہ کر ٹھکرادیا کہ نیب کے زیر اہتمام سیمینار میں شرکت نہیں کر سکتا کیونکہ نیب کرپشن کو پرموٹ کرتی ہے ختم نہیں کرتی۔یاد رہے اس سے قبل بھی سینئر تجزیہ کار حامد میر چیئرمین نیب کو تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں۔ تاہم بار انہوں نے

کہا ہے کہ چیئرمین لابنگ کے تحت آئیں جو احتساب قائم نہیں کر سکتے کیونکہ ان کے ایک اہم شخصیت کے ساتھ تعلقا ت ہیں جس کے خلاف میں کافی پروگرامز بھی کر چکا ہوں۔واضح رہے حامد میر اس سے قبل اپوزیشن کیخلاف ہونے والی کارروائیوں کا یک طرف قرار دے چکے ہیں ، اور کئی بار انہوں نے سوال اٹھایا کہ بی آرٹی جیسے منصوبے پر کرپشن کی گئی، پر ویز خٹک کو کیوں گرفتار نہ کیا گیا ۔ تاہم اب حامد میر نے دعویٰ کیا ہے کہ چیئرمین نیب لابنگ کر کے آئے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us