دنیا میں واقع وہ واحد چرچ جہاں نماز جمعہ ادا کی جاتی ہے


وسٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)ایک طرف مغرب میں اسلامو فوبیاکی تشویشناک لہر نے عالم اسلام کو تشویش میں مبتلا کر رکھا ہے تو دوسری جانب امریکی شہر بوسٹن میں ایک چرچ میں مسلمانوں کو نماز جمعہ ادا کرنے کےلئے جگہ دے دی گئی ہے۔ امریکی شہر بوسٹن کی مرکزی چرچ بین المذاہب ہم آہنگی کی بہترین مثال ہے۔بوسٹن شہر کی تاریخی چرچ آف سینٹ

پال اس لحاظ سے امریکہ میں اہمیت کی حامل ہے۔اسکے دروازے عیسائیوں کے ساتھ ساتھ مسلمانوں کے لئے بھی کھلے ہوتے ہیں،مسلمان کئی سالوں سے یہاں باقاعدہ نماز جمعہ ادا کرتے ہیں۔چرچ انتظامیہ نے مسلمانوں کو جگہ تب پیش کی جب قریبی یونیورسٹی کے مسلم سینٹر میں جگہ کم پڑ گئی اور مسلمان کہیں بھی نماز جمعہ کے لئے جگہ تلاش نہ کر پا رہے تھے،چرچ انتظامیہ نے مسلمانوں کو تہ خانہ میں نماز ادا کرنے کی اجازت دی۔وقت کے ساتھ ساتھ چرچ میں حیران کن تبدیلیاں آگئی ہیں۔اب یہاں روایتی بینچز کی بجائے قالین بچھائے جاتے ہیں اور عیسائی برادری عارضی کرسیوں پر بیٹھ کر عبادت کرتی ہے۔بوسٹن میں مسلم کمیونٹی کے صدر کا کہنا تھا کہ اب یہ چرچ ایک بین المذاہب سینٹر کی حیثیت اختیار کر گیا ہے۔یہاں اب باقاعدہ کانفرسز کا انعقاد ہوتا ہے جہاں مختلف مسائل پر بحث کی جاتی ہے۔

مسلمان یہاں چندہ جمع کر کے سینکڑوں ضرورت مند شہریوں کو بلامعاوضہ کھانا کھلاتے ہیں۔ایک طرف جہاں انتہا پسندی دنیا میں تیزی سے پھیل رہی ہے وہیں یہ چرچ سب کے لئے مذہبی رواداری کا شان دار نمونہ ہے



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us