ملائشیا سمٹ میں شریک ممالک عربوں کے بغیر آگے نہیں بڑھ سکتے ،عرب امارت


دوبئی( آن لائن )متحدہ عرب امارات کے وزیر ملکت برائے امور خارجہ انور قرقاش نے سعودی عرب کے اس موقف کا اعادہ کیا ہے کہ ملائشیا سمٹ مسلم دنیا کو درپیش مسائل پر غور کے لیے ایک غلط فورم تھا۔ سعودی عرب نے کوالالمپور سمٹ میں اپنی عدم شرکت کے فیصلے کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ یہ دنیا کے ایک ارب 75کروڑ مسلمانوں کو درپیش

مسائل پر تبادلہ خیال کے لیے ایک غلط فورم ہے۔ایسے مسائل پر اسلامی تعاون تنظیم کے فورم ہی پر بات چیت کی جانا چاہئیے۔سعودی شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے ملائشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد سے ٹیلیفونک گفتگو بھی کی تھی۔اور گفتگو میں مملکت کے اس موقف کا اعادہ کیا تھا کہ ایسے ایشوز پر صرف او آئی سی کے پلیٹ فارم ہی سے بات چیت کی جانا چائیے کیونکہ او آئی سی نے اکثر مسلم ممالک کے اجتماعی مسائل و امور پر اجتماعی آواز کے طور پر کام کیا ہے۔اسی حوالے سے متحدہ عرب امارات کے وزیر ملکت برائے امور خارجہ انور قرقاش نے سعودی عرب کے اس موقف کا اعادہ کیا ہے کہ ملائشیا سمٹ مسلم دنیا کو درپیش مسائل پر غور کے لیے ایک غلط فورم تھا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطاق انور قرقاش نے ٹویٹر پرلکھا کہ کیا یہ اسلامی دنیا کے لیے ممکن ہے کہ وہ عربوں کی عدم موجودگی میں بلند ہوسکیں اس کا واضح جواب ہے، نہیں، کیونکہ تقسیم ،علیحدگی اور

تعصبات کبھی حل ثابت ہوئے ہیں اور نہ ثابت ہوں گے۔خیال رہے کہ اس سے قبل سعودی سفارت خانے نے سعودی عرب کے پاکستان کو کولالمپور سمٹ میں شرکت نہ کرنے ہر مجبور کرنے کی تردید کر



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us