پاکستان کو ملائیشیا سمٹ میں شرکت لازمی کرنی ہو گی


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) کوالا لمپور سمٹ میں پاکستان کے شریک نہ ہونے پر ترکی کے صدر رج طیب ارگان نے انکشاف کیا کہ سعودی عرب نے سمٹ سے دور رکھنے کےلئے پاکستان کو دھمکی دی تھی کہ پاکستان کے 40لاکھ مزدوروں کو نکال دیا جائے گا۔اورپاکستان سینیٹرل بینک سے رقم نکال لی جائے گی تاہم اس بارے میں سینئرملکی صحافی

اور تجزیہ کار ہارون رشید کہتے ہیں کہ پہلی بات تو یہ ہے کہ سعودی عرب میں 40لاکھ نہیں بلکہ 26لاکھ پاکستانی ملازمین ہیں۔ دوسری بات یہ اچانک انھیں نکالنا کوئی مذاق نہیں ہے کیونکہ ان کی جگہ راتوں رات نئے لوگ لانا اور انھیں ٹرین کرنا ناممکن بات ہے۔ اس میں انتظامی مسائل ہیں۔تیسری بات یہ کہ سعود ی معیشت اب اتنی بھی مضبوط نہیں کہ وہ 26لاکھ کارکنوں کےاچانک اس طرح سسٹم سے نکل جانے کی جھٹکا سہہ پائے گی۔ اور چوتھی اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ امریکا یہ تہیہ کرچکا ہے کہ وہ اسرائیل کو مشرق وسطیٰ کا کنٹرول دے گا۔ اور ان عرب ملکوں میں شاہی خاندانوں نے حکومتیں کرنے اور اپنے کاروبار کو وسعت دینے کے علاوہ کوئی کام نہیں کیا۔اپنے ہتھیار تک مینٹین تک نہیں کرسکے اور فوج بنانے سے بھی ڈرتے رہے۔تو پاکستان کے پاس اچھا موقع ہے کہ بجائے کہ اس طرح

ریموٹ کنٹرول کی طرح استعمال ہو۔اپنی پوزیشن منوائے۔ یہاں یہ بھی سبق ہے کہ ہمیں صرف اور صرف دوسروں پر انحصار کی پالیسی ختم کرنا ہوگی۔ اپنے فیصلے خود کرنے کی عادت ڈالنی ہو گی۔اور اصل بات یہ بھی ہے کہ وزیر اعظم کو اچھے وزیر خارجہ کی ضرورت ہے۔ شاہ محمود قریشی وزیر خارجہ کےلئے کوئی اچھا میٹریل نہیں ہیں۔ ایک طرف پورا ملک ڈرا ہواہے اوپر سے وزیر خارجہ اسے مزید ڈراتے رہتے ہیں۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us