روس میں آسان قرضوں کا رجحان ،51 فیصدشہری قرضے کے بوجھ تلے دبنے لگے


ماسکو ( آن لائن )روس میں آسان قرضوں کے رجحان میں ہوشربا اضافہ،51 فیصد سے زیادہ شہری قرضوں کے بوجھ تلے دبتے جارہے ہیں۔ذرائع ابلاغ کے مطابق روسی شہریوں میں آسان قرضوں بالخصوص کریڈٹ کارڈز کا رجحان تیزی سے بڑھ رہا ہے، وہ اپنا معیار زندگی بلند رکھنے اور اپنی ضروریات کو بلاتکلف پورا کرنے کے لیے بینکوں سے قرض اور

کریڈٹ کارڈز جیسی اشیا کا سہارا لیتے ہیں تاہم یہ عمل سہولت سے زیادہ مصیبت بنتا جارہا ہے،بعض دفعہ صارف بینک کو واجب الادا رقم ادا کرتا ہے تو وہ خود خالی جیب ہوجاتا ہے۔روس کے مرکزی بینک کے مطابق رواں سال یکم اکتوبر کو ملک میں جاری کردہ کنزیومر لونز کا حجم بڑھ کر 8.7 ٹریلین روبلز (139 ارب ڈالر) تک پہنچ چکا تھا جو اسی سال یکم جنوری کو 7.4 ٹریلین روبلز کی سطح پر تھا۔دوسری جانب وزیر برائے اقتصادی امور میکسم اوریشکن نے جولائی کے دوران ایک بیان میں کہا تھا کہ غیر محفوظ قرضوں میں تیزی سے اضافہ ایک بڑا سماجی مسئلہ ہے اور 2021 کے دوران اس میں مزید تیزی آسکتی ہے۔انھوں نے کہا کہ 2018 کی آخری سہ ماہی کے دوران ایک تہائی قرضے گھرانوں نے لیے جو

قرضوں کے نتیجے میں اپنی 60 فیصد ماہانہ آمدنی کا خاتمہ کربیٹھے یہاں تک کہ بعض کو پرانے قرضوں کی ادائیگی کے لیے نئے قرضے لینے پڑے



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us