پی آئی سی واقعہ: ملک بھر کے وکلاء نےکیا کام کر ڈالا ؟


لاہور (نیوز ڈیسک)پی آئی سی واقعہ: ملک بھر کے وکلاء نےکیا کام کر ڈالا ؟ ۔۔۔
ملک بھر کی وکلاء ایسوسی ایشن نے لاہور ہائیکورٹ سے معافی مانگ لی۔ تفصیل کے مطابق لاہورہائیکورٹ نے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر وکلاء کے حملے کے بعد وکلاء کی گرفتاری اور گھروں پر چھاپے مارنے جانے کیخلاف کیس کی سماعت لاہور

ہائیکورٹ میں کی گئی ۔ ملک بھر کی وکلاء ایسوسی ایشن نے لاہور ہائیکورٹ سے معافی مانگ لی۔عدالت نے چیف سکریٹری ، آئی جی پنجاب اور ہوم سیکریٹری کو ذاتی حیثیت میں طلب کر لیا۔ عدالت نے ریمارکس دیئے کہ پی آئی سی پر حملے کیلئے جانے والے وکلاء نے سب کا منہ کالا کر دیا ہے۔ سماعت کے دوران عدالت نے ریمارکس دیئے کہ 2 فیصد وکلاء نے 100 فیصد وکلا کو یرغمال بنا کر رکھا ہے۔ افسوس کی بات تو یہ ہے کہ کوئی جج وکلاء کے کیس کو سننے کیلئے تیار نہیں ہے۔درخواست گزار کے وکیل اعظم نذیر تارڑ نے غلطی تسلیم کرتے ہوئے کہا کہ یہ بار کی ناکامی ہے۔ وکلاء میں بھی احتساب کا عمل شروع ہونا چاہیے ۔ کسی کی سماعت کل تک ملتوی کردی گئی ہے۔یاد رہےوکلاء نے پی آئی سی پر حملہ کیا تھا،وکلا کے تشدد کے بعد کئی مریض جان کی بازی ہار گئے تھے ، دوسری جانب پنجاب حکومت نے 80زائد وکلا کو حراست میں لے لیا گیا تھا ، باقیوں کی تلاش جاری ہے۔پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں تشدد کے بعد نو مریضوں کی موت ہو چکی ہے۔اس حوالے سے40 وکلا کوحراست میں لے لیاگیا ہے۔عینی شاہدین کاکہنا تھا ہے کہ اسپتال کے

احاطے میں وکلا کی کارروائیوں کے نتیجے میں ہلاک ہونے والوں کے لواحقین سمیت ، وکلاء نے مریضوں کے لئے زندگی کی سہولت کے نظام کو تباہ کرنے اور اسپتال کے سامان کو نقصان پہنچانے کی فعال کوشش کی۔ واضح رہے وکلاء کی گرفتاری کیلئے ان کے گھرو ں پر چھاپے مارے جا رہے تھے جس کیخلاف لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی کہ چھاپوں کو رکوا کر گرفتار وکلاء کو رہا کیا جائے۔ تاہم ملک بھر کی وکلاء ایسوسی ایشنز نے لاہور ہائیکورٹ میں معافی مانگ لی ہے۔



اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں


Copyright © 2017 https://pakistanlivenews.com All Rights Reserved
About Us | Privacy Policy | Disclaimer | Contact Us