جمعرات‬‮   15   ‬‮نومبر‬‮   2018
           

عمران خان نے شیریں مزاری کی بیٹی کی فوج اور دھرنے والوں پر تنقید کا ایسا جواب دے ڈالا کہ 20 یا 22سال کی لڑکی آئندہ سوچ سمجھ کر بولے گی


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) چئیرمین پاکستان تحریک انصاف عمرا ن خان نے شیریں مزاری کی بیٹی ایمان مزاری کی جانب سے فوج اور مظاہرین کے مابین معاہدے اور رقم کی تقسیم کے معاملے پر تنقید کا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ میں اس معاشرے میں 20سال رہا اور پڑھالکھا ہوں جہاں پر لبرلز اور ہیومنسٹس کی اصطالاحات تیار ہوتی ہیں اور دوسرے

ملکوںکو برآمد کی جاتی ہیں۔ لبرل کا مطلب ہے انسانیت کا بنیادی معاشرتی اہمیت اور تحفظ حاصل ہونا ۔ لبرل ہمیشہ اینٹی وار ہوتا ہے۔ عراق جنگ کےخلاف برطانیہ کے 20لاکھ لوگ سڑکوں پر نکلے ۔ کیونکہ وہ جنگ کے خلاف تھے ۔انسانوں کا قتل عام نہیں چاہتے تھے۔ یہاں پر تین ہزار لوگ بھی نہیں نکلتے۔ میں مشرف کی شروع کی گئی اینٹی طالبان جنگ کے خلاف تھا فوج کے آپریشن کے خلاف تھا تو مجھے طالبا ن خان کا نام دے دیا گیا۔ میں لال مسجد آپریشن کے خلاف تھا۔پھر وہ آپریشن ہوا تو پورے ملک میں آگ لگ گئی اور سوات میں بھی وہی آگ لگی تھی۔ کبھی بھی مسائل بندوق سے حل نہیں ہوتے۔ بات چیت کی جاتی ہے۔ تنازعات حل کیے جاتے ہیں۔ ان دھرنے والوں کے خلاف آپریشن بھی ٹھیک نہیں تھا۔ کیونکہ یہ دہشتگرد نہیں تھے۔ بات چیت چاہتے تھے اور آخر میں معاملہ بات چیت سے ہی ختم ہوا۔

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ تر ین
دلچسپ و عجیب
روحانی دنیا
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ پاکستان لائیو نیوز محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Pakistan Live News. All Rights Reserved
   About Us    |    Privacy policy    |    Contact Us