منگل‬‮   23   اکتوبر‬‮   2018
           

پیشاب آنے پر روک کے رکھنا چاہیے یا کردینا چاہیے ؟یورپین ڈاکٹروں نے نئی تحقیق کرڈالی


لندن(نیوزڈیسک)اکثر آپ سنتے ہوں گے کہ اگر پیشاب آجائے تو جلد کرلینا چاہیے ہے لیکن اب نئی تحقیق میں ماہرین صحت کا خیال ہے کہ تھوڑی دیر کے لئے پیشاب روکنا بھی ایک اچھی عادت ہے۔ اپنی اس بات کی توجیح وہ یہ پیش کرتے ہیں کہ جیسے ہی ہمیں پیشاب آتا ہے تو مثانہ بھرنا شروع ہو جاتا ہے اور یہ اعصاب کے ذریعے دماغ کو سگنل بھیجتا ہے کہ اسے خالی کیا جائے اور جب تک یہ خالی نہیں ہوجاتا تب تک یہ سگنلز بھیجتا رہتا ہے۔ سائنسدان کہتے ہیں کہ یہ ایک اچھا عمل ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ ہمارے اعصاب حرکت میں رہتے ہیں اور اگر ہم اپنے مثانہ کو بار بار خالی کرتے رہیں تو اعصاب یہ سگنلز نہیں بھیجتے اور ہم اعصابی کمزوری کا شکار ہو جاتے ہیں۔برطانوی یورولوجسٹ ذکی المالا کہتے ہیں کہ پیشاب کی کئی بیماریاں ہماری ماضی کی عادات کی وجہ سے پیدا ہوتی ہیں۔اس کا کہنا ہے کہ اگر آپ اپنے مثانہ کو جلدی خالی کر یں تو اگر آپ کو ہلکا سا بھی پیشاب آئے تو یہ فورادماغ کو بتائے گا اور یوں آپ کو اپنے پیشاب پر کنٹرول کرنا مشکل ہوتا جائے گا۔ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ اگر آپ کو پیشاب آئے تو تھوڑی دیر رک جانا بہتر ہے کیونکہ اس طرح یہ آپ کے مثانے کو مضبوط بناتا ہے۔

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ تر ین
دلچسپ و عجیب
روحانی دنیا
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ پاکستان لائیو نیوز محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Pakistan Live News. All Rights Reserved
   About Us    |    Privacy policy    |    Contact Us