ہفتہ‬‮   19   جنوری‬‮   2019
           

امریکہ کے چیف آف سٹاف نے بھی استعفیٰ دے دیا


واشنگٹن (آئی این پی )امریکی دفاعی ادارے پینٹاگون کے چیف آف اسٹاف کیون سوینی 2 سال خدمات سرانجام دینے کے بعد مستعفی ہوگئے۔سی این این کی رپورٹ کے مطابق کیون سوینی نے گزشتہ شب ( 5 جنوری کو) محکمہ دفاع کی ویب سائٹ پر پوسٹ کیے گئے ایک مختصر پیغام میں لکھا کہ میں نے فیصلہ کیا ہے کہ نجی سیکٹر میں واپس جانے کے لیے یہی

وقت صحیح ہے، محکمہ دفاع میں خدمات سرانجام دینا میرے لیے ایک اعزاز ہے۔کیون سوینی، سابق سیکریٹری دفاع جیمز میٹس کے ماتحت تھے، جنہوں نے 20 دسمبر کو امریکی صدر کی جانب سے شام سے انخلا کے فیصلے پر مستعفی ہونے کا اعلان کیا تھا۔خیال رہے کہ کیون سوینی ایک ماہ میں عہدہ چھوڑنے والے تیسرے پینٹاگون آفیسر ہیں، سابق سیکریٹری دفاع جیمز میٹس کے علاوہ چندروز قبل پینٹاگون کی چیف ترجمان ڈینا وائٹ بھی مستعفی ہوگئی تھیں۔ڈینا وائٹ نے بے ضابطگیوں کی الزامات عائد کیے جانے کے بعد استعفیٰ دیا تھا۔اس سے قبل جیمز میٹس نے امریکی صدر کو بھیجے گئے استعفے میں لکھا تھا کہ آپ کو اختیار ہے کہ ایسا سیکریٹری دفاع تعینات کریں جو آپ کا ہم خیال ہو اسی بنا پر میرے لیے بہتر ہے کہ میں اپنا عہدہ چھوڑ دوں۔تاہم ڈونلڈ ٹرمپ نے جیمز میٹس کو برطرف کرنے کا دعوی کیا تھا اور کابینہ اجلاس کے دوران کہا کہ جم میٹس نے میرے لیے کیا کیا ہے؟۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے سابق سیکریٹری دفاع پر افغانستان سے متعلق تنقید کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کمانڈ کے دوران امریکی فوج کی پالیسی اچھی نہیں تھی۔خیال رہے کہ جیمز میٹس سے قبل ٹرمپ کابینہ کے سینئر عہدیداران بھی عہدہ چھوڑ چکے ہیں۔ڈونلڈ ٹرمپ نے اٹارنی جنرل جیف سیشن کو نومبر میں مڈٹرم انتخابات کے فوری بعد برطرف کردیا تھا، اس سے قبل ٹرمپ نے سیکریٹری اسٹیٹ ریکس ٹلرسن کو بھی برطرف کیا تھا جبکہ مشیر قومی سلامتی ایچ آر میک ماسٹر گزشتہ برس مئی میں ریٹائر ہوگئے تھے۔

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ پاکستان لائیو نیوز محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Pakistan Live News. All Rights Reserved
   About Us    |    Privacy policy    |    Contact Us