ہفتہ‬‮   21   اپریل‬‮   2018
           

جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر گولیاں کس نے چلوائیں؟؟آئندہ یہی کام کس کے گھر پر ہو سکتا ہے؟؟شیخ رشید میدان میں آگئے


اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد نے کہا ہے کہ جسٹس اعجازالاحسن کے گھر پر فائرنگ احتساب عدالت کو ڈرانے کی کوشش تھی کیونکہ چار چھ ہفتے میں ان کا فیصلہ آرہا ہے جو گولی جج کے گھر پر چل سکتی ہے وہ کل حمزاہ شہباز یا شہباز شریف کے گھر پر بھی چل سکتی ہے ۔ سپریم کورٹ کے باہر صحافیوں سے

گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید احمد نے کہا کہ احتساب عدالت میں نواز شریف نے اپنی مرضی کے ٹوئیٹر اور واٹس گروپ رکھا ہوا ہے جس میں ان کی مرضی کی خبریں چلتی ہیں جسٹس اعجاز الاحسن کے گھر پر فائرنگ کی گئی یہ ایسا پوش علاقہ ہے پھر بھی ابھی تک ملزموں کی گرفتاری عمل میں نہیں آئی جسٹس اعجازالاحسن کے گھر سے 200گز کے فاصلے پر حمزہ شہباز کا گھر ہے اگر یہ گولی جج صاحبان کے گھر پر لگ سکتی ہے تو مستقبل میں حمزہ شہباز کے گھر پر بھی گولی لگ سکتی ہے مجھے ڈر ہے کہ الیکشن میں کوئی حادثہ رونما نہ ہوجائے انہوں نے کہا کہ حکومت نے کوئی بجلی پانی گیس کچھ بھی نہیں دیا بلکہ نواز شریف نے فوج ،عدلیہ ،نیب اور دیگر اداروں کو گالیاں ہی دی ہیں نواز شریف ،مریم نواز اور دیگر لیگی اراکین پر لاہور ہائی کورٹ کی جانب سے لگائی جانی والی میڈیا ٹاک پر پابندی اچھا اقدام ہے اس سے ادارے تنقید اور ن لیگ مزید انتشہار سے بچ جائے گی انہوں نے مزید کہا کہ میرا کیس 62ون ایف کا نہیں میں منی لانڈرنگ میں ملوث نہیں اور نہی ہی کچھ چھپایا ہے میرے انکم ٹیکس گوشوارے بھی مکمل ہے اپنے خلاف نااہلی کے فیصلے سوال کے جواب میں شیخ رشید احمد نے کہا کہ وہ چیف جسٹس سے اپنا کیس روزانہ کی بنیاد پر سننے کی درخواست کرنے آئے ہیں۔ وہ الیکشن کمیشن سے یہ کیس جیت چکے ہیں اور اللہ سے 120 فیصد امید ہے کہ سپریم کورٹ سے بھی ان کے حق میں ہی فیصلہ آئے گا اور اگر ان کے خلاف بھی فیصلہ آگیا تو وہ چیخیں نہیں ماریں گے۔شیخ رشید نے کہا کہ الیکشن تھوڑی تاخیر سے ہوگا کیونکہ سارے کیسز سپریم کورٹ میں جائیں گے، اب سپریم کورٹ کتنا ٹائم لے گی یہ وقت ہی بتائے گا۔ الیکشن ستمبر ، اکتوبر یا نومبر میں ہوسکتا ہے لیکن یہ جسٹس ثاقب نثار کے دور میں ہی ہوگا

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ تر ین
دلچسپ و عجیب
روحانی دنیا
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ پاکستان لائیو نیوز محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Pakistan Live News. All Rights Reserved
   About Us    |    Privacy policy    |    Contact Us