جمعرات‬‮   26   اپریل‬‮   2018
           

فرعون نے اپنی بیٹی کی خادمہ کے ساتھ کیا کیا؟؟؟خادمہ کو اس کی مظلومیت کا کیا اجر ملا؟ایمان افروز واقعہ


مصر کے بادشاہ فرعون نے اپنی بیٹی کی خدمت اور اس کا خیال رکھنے کےلئے ایک خادمہ کو مامور کر رکھا تھا۔ یہ خادمہ حضرت موسیٰ علیہ السلام کی دعوت و تبلیغ سے متاثر ہو کر ایمان کے دولت سے مالا مال ہو چکی تھی۔ایک روز یوں ہوا کہ فرعون کی بیٹی کی خادمہ اس کے بالوں میں کنگھی کررہی تھی۔ کہ یکا یک کنگھی اس کے ہاتھ سے زمین پر گر گئی۔ اور اس کے منہ سے نکلا۔ ” بسم اللہ ” اس پر فرعون کی بیٹی نے حیران ہوکر خادمہ سے پوچھا۔

Related image

کیا میرا باپ فرعون خدا نہیں ہے؟ خادمہ نے جواب دیا نہیں تیرا باپ خدا نہیں ہے۔ بلکہ خدا تو اللہ سبحانہ وتعالیٰ ہے جو میرا ،تیرا ، تیرے باپ کا اور سب کا خد ا ہے۔ فرعون کی بیٹی نے پھر پوچھا کہ کیا یہ بات میں اپنے باپ کو بتائوں؟ خادمہ نے جواب دیا ہاں بتا دے۔ فرعون کو جب اس بات کا پتہ چلا تو اس نے خادمہ کو بلوا بھیجا ۔جب وہ بادشاہ کے سامنے پیش ہوئی تو بادشاہ فرعون نے پوچھا ، بتا کیا میں خدا نہیں ہوں؟ اس پر خادمہ نے جواب دیا کہ نہیں خدا تو نہیں بلکہ میرا رب االلہ تعالیٰ ہے۔فرعون نے بار بار یہ سوال دہرایا تو خادمہ نے ہر بار یہی جواب دہرایا۔ فرعون ایک بار پھر آگ بگولہ ہو گیا اور اس نے اپنے خادموں کو حکم دیا کہ ایک تانبے کا بڑا برتن لے کر آئو اور اس میں تیل ڈال کر اسے خوب گرم کرو ۔حتیٰ کہ وہ تیل کھولنا شروع ہو جائے اور اس عورت کے بیٹوں کو اس کے سامنے ایک ایک کر کے اس تیل میں ڈال دو تاکہ وہ جل کر بھسم ہو جائیں ۔حکم کی تعمیل ہوی ۔جلد ہی بڑے برتن میں ڈالا گیا تیل آگ کی تپش کے باعث کھول رہا تھا ۔خادمہ کے

Related image

بیٹوں کو ایک ایک کرکے کھولتے ہوئے تیل میں ڈالا جانے لگا۔ اس کے بیٹے اس کھولتے ہوئے تیل میں گرتے ہی جل کر راکھ ہوجاتے تھے۔ فرعون کے خادموں نے اس عورت کے سب بیٹوں کو اپنی ماں کی آنکھوں کے سامنے جلا ڈالا۔ ایک ماں جو اپنے بچوں کو معمولی سی تکلیف پہنچنا بھی برداشت نہیں کرتی ۔ اپنی آنکھوں کے سامنے انھیں جل کر راکھ ہوتا دیکھنا اس کےلئے کتنا تکلیف دہ ہوا ہو گا۔ اب خادموں نے اس عورت سے وہ آخری بچہ چھیننے کی کوشش کی جو شیر خوار تھا اور اس کی گود میں تھا۔اس پر اس کی ممتا تڑپ اٹھی۔ اور وہ چیختے چلاتے ہوئے فریاد کرنے لگی کہ تم نے میرے سب بیٹوں کو مار ڈالا۔ اس معصوم شیر خوار بچے کو تو اتنا بےدردی سے مت مارو۔ قریب تھا کہ وہ مظلوم خادمہ اپنے بچے کی جان بچانے کےلئے اپنے عقیدے سے پسپائی اختیار کر لیتی لیکن اللہ تعالیٰ کے حکم سے اس شیر خوار بچے کو زبان عطا ہوئی اور اس نے یہ روح پرور الفاظ کہے

Image result for ‫فرعون‬‎

“اے ماں ! غم نہ کر۔ اور انھیں آگ میں ڈال لینے دے ۔ بے شک دنیا کا عذاب آخرت کے عذاب سے بہت کم ہے۔”
اس طرح اللہ تعالیٰ نے روز آخرت کے دردناک عذاب کی شدت ایک شیر خوار بچے کی زبان سے بیان کر دی ہے اور کھولتے ہوئے اس تیل کو آخرت کی آگ کے سامنے انتہائی معمولی اور کم تکلیف دہ قرار دے دیا ہے۔یہ بات عقل والوں کےلئے ایک واضح اشارہ ہے۔
اور یوں اللہ پر ایمان لانے کی سزا کے طورپر اس خادمہ کے سارے بیٹوں کو فرعون نے سفاکی سے اس کی آنکھوں کے سامنے قتل کروادیا۔روایات میں ہے کہ جب حضور اکرم معراج کے سفر پر تھے تو ایک مقام پر انھیں ایک بہت ہی خوشگوار خوشبو محسوس ہوئی۔ تو انھوں نے حضرت جبرائیل علیہ السلام سے سوال کیا کہ یہ خوشبوکیسی ہے۔تو جبرائیل امین نے جواب دیا کہ یہ فرعون کی بیٹی کی خادمہ کے لباس کی خوشبو ہے۔ اور اس کے بارے جبرائیل امین نے وہ سارا واقعہ حضور علیہ السلام کے سامنے بیان کر ڈالا۔اس طرح اللہ تعالیٰ نے اپنی اس صبر کرنے والی مظلوم بندی کو اس کے اجر کے طور پر ایک مقام فضلیت عطا کیا اور اس کو یہ تحسین عطا کی کہ اس کے لباس کی خوشبو کو اللہ کے حبیب نے بھی محسوس کیا۔

 

اس وقت سب سے زیادہ مقبول خبریں
تازہ تر ین
دلچسپ و عجیب
روحانی دنیا
تمام اشاعت کے جملہ حقوق بحق ادارہ پاکستان لائیو نیوز محفوظ ہیں۔
Copyright © 2016 Pakistan Live News. All Rights Reserved
   About Us    |    Privacy policy    |    Contact Us